Home / Ahadith-e-Mubarka / ALLAH’s Messenger صلى الله عليه وآله وسلم as saying: Do you know what is backbiting?

ALLAH’s Messenger صلى الله عليه وآله وسلم as saying: Do you know what is backbiting?

حدثنا يحيی بن أيوب وقتيبة وابن حجر قالوا حدثنا إسمعيل عن العلا عن أبيه عن أبي هريرة أن رسول الله صلی الله عليه وسلم قال أتدرون ما الغيبة قالوا الله ورسوله أعلم قال ذکرک أخاک بما يکره قيل أفرأيت إن کان في أخي ما أقول قال إن کان فيه ما تقول فقد اغتبته وإن لم يکن فيه فقد بهته

یحیی بن ایوب، قتیبہ ابن حجر اسماعیل علاء، حضرت ابوہریرہ رضی اللہ تعالیٰ عنہ سے روایت ہے کہ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا کیا تم جانتے ہو کہ غیبت کیا ہے صحابہ کرام رضی اللہ عنہم نے عرض کیا اللہ اور اس کا رسول ہی زیادہ بہتر جانتے ہیں آپ صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا اپنے بھائی کے اس عیب کو ذکر کرے کہ جس کے ذکر کو وہ ناپسند کرتا ہو آپ سے عرض کیا گیا کہ آپ صلی اللہ علیہ وسلم کا کیا خیال ہے کہ اگر واقعی وہ عیب میرے بھائی میں ہو جو میں کہوں آپ صلی اللہ علیہ وسلم فرمایا اگر وہ عیب اس میں ہے جو تم کہتے ہو تبھی تو وہ غیبت ہے اور اگر اس میں وہ عیب نہ ہو پھر تو تم نے اس پر بہتان لگایا ہے۔

Narrated Abu Huraira رضى الله تعالى عنه reported ALLAH’s Messenger صلى الله عليه وآله وسلم as saying: Do you know what is backbiting? The (the Companions) said: ALLAH and His Messenger صلى الله عليه وآله وسلم know best. Thereupon he (the Holy Prophet) صلى الله عليه وآله وسلم said: Backbiting implies your talking about your brother in a manner which he does not like. It was said to him صلى الله عليه وآله وسلم: What is your opinion about this that if I actually find (that failing) in my brother which I mad a mention of? He صلى الله عليه وآله وسلم said : If (that failing) is actually found (in him) what you assert, you in fact backbited him, and if that is not in him its is a slander.

صحیح مسلم:جلد سوم:حدیث نمبر 2092 حدیث مرفوع مکررات 8 متفق علیہ 1

Comments

comments

About Fiaz Ahmed

Leave a Reply